بنوں: ٹریفک جام لیکن پولیس اہلکارچالان میں مصروف، کریم خان کی رپورٹ

بنوں شہر میں مسلسل کئی کئی گھنٹوں تک ٹریفک جام سے گاڑیوں کی لمبی لمبی قطاروں نے شہریوں کی مشکلات بڑھا دی ۔ٹریفک اہلکار ٹریفک کنٹرول کرنے کی بجائے ڈرائیوروں کو چالان کرنے میں مصروف نظر آنے لگے ۔بنوں شہر کی تمام اہم شاہراہوں اندرون شہر قصابان چوک ،چائے بازار لکی گیٹ،ٹانچی بازار زنانہ ہسپتال روڈ پریٹی گیٹ روڈ،کچہری گیٹ روڈمیریان گیٹ اور منڈان گیٹ سمیت بازار احمد چوک میں گھنٹوں گھنٹوں ٹریفک جام ۔ خصوصاً چنگ رکشوں کی لمبی لمبی قطاریں کھڑی رہتی ہیں جس کے باعث سکولوں کے طلباء وطالبات اور عوام کو آمد و رفت کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے جس کی خاص وجہ یہ بھی ہے کہ مختلف جگہوں چنگ چی رکشوں نے غیر قانونی اڈے بنائے ہیں مگر ٹریفک کے اہلکار سڑک کھولنے اور ٹریفک کنٹرول کرنے کی بجائے ڈرائیوروں کا چالان کرنے میں مصروف ہوتے ہیں۔ جبکہ دوسری وجہ یہ بھی ہے کہ بغیر کسی شیڈول کے شہر میں مال بردار گاڑیاں داخل ہوتی ہیں جو کہ دکانوں کے سامنے کھڑی کرکے خالی کرائی جاتی ہیں جس کے باعث ٹریفک کی روانی معطل ہو جا تی ہے۔ عوامی حلقوں نے آئی جی پولیس خیبر پختونخوا، کمشنربنوں کامران زیب ڈپٹی کمشنر محمد علی آصغر ،ڈی پی او بنوں صادق بلوچ سے مطالبہ کیا ہے کہ بنوں میں کئی مہینوں سے درپیش ٹریفک مسائل کو ہنگامی بنیادوں پر حل کئے جائیں اور صبح اور شام کے اوقات میں شہر کے داخلی راستوں پر ٹریفک پولیس کے خصوصی دستے تعیناتی کے ساتھ ساتھ شہر میں سکولوں کے باہر بھی ٹریفک اہلکار تعینات کئے جائیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں