ماحول دوست شاپرز،اسسٹنٹ کمشنر بنوں کی غیر منطقی باتیں

اسسٹنٹ کمشنر بنوں شبیر خان نے کہا ہے کہ ماحولیاتی آلودگی میں پلاسٹگ بیگز کا بنیادی عمل دخل ہے ۔اس کے استعمال سے ہماری روز مرہ زندگی بری طرح متاثر ہو رہی ہے جس کی مثال ہمارے سامنے ہے کہ ان پلاسٹگ بیگز کی وجہ سے ضلع بنوں میں نکاس آب کا انتظام مکمل طور پر بند تھا ۔ضلعی انتظامیہ نے نکاس آب کا انتظام مؤثر بنانے کیلئے تجاوزات کے خلاف گرینڈ آپریشن شروع کیا کیونکہ یہ پلاسٹک بیگزسالوں تک پانی میں ناقابل تحلیل ہو تے ہیں۔ وجہ صرف یہ تھی کہ شہر کی نالیاں پلاسٹک بیگز کی وجہ سے بند پڑی تھی جس کو صاف کرنے اور نکاس آب کا انتظام بہتر بنانے پر زور دیا گیا ۔
ان خیالات کا اظہار اُنہوں نے میونسپل کمیٹی بنوں ہال میں پلاسٹک بیگ کے استعمال کی خامیاں اور قابل تحلیل شاپنگ بیگز کی خوبیوں کے سلسلے میں منعقدہ سیمینار سے خطاب کر رہے تھے ۔جس سے ظاہر خان ،لوکل گورنمنٹ ایمپلائز فیڈریشن خیبر پختونخوا کے صوبائی نائب صدر حافظ کریم داد ،ملک عالم زیب خان ، ولی محمد خان و دیگر نے بھی خطاب کیا۔ جبکہ تحصیل نائب ناظم ڈاکٹر ریاض علی بھی اس موقع پر موجود تھے ۔مقررین نے کہا کہ غیر قابل تحلیل شاپنگ کی روک تھام اور ماحول کی آلودگی و صفائی کیلئے صوبائی زور و شور سے کام کر رہی ہے۔ عام پلاسٹک بیگ کی معیاد 100سے 400سال تک ہے جبکہ قابل تحلیل شاپنگ بیگ (ماحول دوست) کی معیاد 18ماہ ہے جبکہ پانی میں یہ ایک سال میں تحلیل اسی طرح تحلیل ہو کر گوبر میں تبدیل ہو جاتی ہے جو ہماری فصلوں کیلئے کار آمدبنتی ہے ۔سیمینار کے آخر میں دکانداروں میں قابل تحلیل شاپنگ بیگز تقسیم کئے گئے ۔

ایڈیٹر نوٹ: اسسٹنٹ کمشنر بنوں کی اس سادگی پر اور کیا کہا جا سکتا ہے کہ ۔۔۔۔ مجھے زندگی کی دعا دینے والے ۔۔۔ہنسی آ رہی ہے تیری سادگی پہ
کہتے ہیں کہ شاپنگ بیگز کی وجہ سے بنوں کی نالیاں بند پڑی تھی جس کیلئے تجاویزات کے خلاف آپریشن کیا گیا اور نالی کھول دی گئی۔کوئی ان صاحب سے پوچھے کہ نالیاں تو شاپنگ بیگز کی وجہ سے بند تھی لیکن آپ لوگوں کے عقل پر کس چیز کا پردہ پڑاتھا۔ میونسپل کمیٹی کے ملازمین نالیوں کی صفائی کیا اس لئے نہیں کر رہے تھے کیو نکہ شاپنگ بیگز کی صفائی ان سے ہو نہیں رہی تھی؟ یہی شاپنگ بیگز تو گندگی کے ڈھیروں پر بھی پڑے ہوتے ہیں وہ ڈھیر کیوں صاف نہیں کئے جاتے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں