انجینئر نگ کونسل سے رجسٹریشن کے بغیربنوں یونیورسٹی کے امتحانات نامنظور،طلباء کا احتجاج

بنوں یونیورسٹی کے سافٹ ویئر اور الیکڑیکل ڈیپارٹمنٹس کے طلبہ نے مطالبات کے حق میں احتجاجی مظاہرہ کیا ہے۔ یونیورسٹی انتظامیہ ہمارے مستقبل سے کھیل رہی ہے۔ حقوق کے حصول تک احتجاج جاری رکھیں گے۔ گزشتہ روز یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنا لوجی بنوں کے سافٹ ویئر اور الیکٹریکل ڈیپارٹمنٹس کے طلبہ کا احتجاجی جلوس کوہاٹ چونگی کیمپس سے نکالا گیا جو مختلف راستوں سے ہو تا ہوا بنوں پریس کلب پہنچا ۔جہاں پر مظاہرے سے عزیز اللہ ، جنیدکنڈی ، سلمان آتش ، عبدالغنی ، ممریز ،خلیل آیاز اور عسکر و دیگر نے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ گزشتہ چار ماہ سے ہم مطالبات کے حق میں احتجاج پر ہیں کہ پاکستان انجینئرنگ کونسل کا وزٹ ، اسسٹنٹ پروفیسرز کورس فولڈر ڈیٹا بیس ، 4bسافٹ ویئر ، ڈی ایل پی لیب اسسٹنٹ کی فراہمی یقینی بنائی جائے جس کیلئے ہم نے امتحانات ملتوی کرنے کا مطالبہ بھی کیا تھا کیونکہ اگر لوازمات پوری نہیں ہوتی تو ایسے وقت میں امتحانات کوئی معنی رکھتے نہ ہی انجینئر نگ کونسل سے رجسٹریشن ملتی ہے ۔مگر یونیورسٹی انتظامیہ ٹھس سے مس نہیں ہو رہی اور زبردستی چند طلبہ کوبیٹھا کر امتحانات کرا رہی ہے۔ جبکہ سینکڑوں طلبہ کا مستقبل داؤ پر لگا یا جا رہا ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ جب تک ہمارے مطالبات تسلیم نہیں کئے جاتے ہمارا احتجاج جاری رہے گا اور وائس چانسلر کو فوری طور پر تبدیل کیا جائے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں