بنوں: خطرناک دہشتگرد گرفتار،بنوں کے دو رہائشی ایران پاکستان سرحد پر ہلاک

انسداد دہشت گردی پولیس یونٹ بنوں نے خطر ناک مجرم اشتہاری گرفتار کر لیا۔ا ب ج بم دھماکوں سمیت دہشت گردی کی کل 31مقدمات میں مطلوب تھا جس کی سر کی قیمت کی 15لاکھ روپے مقرر تھی۔ سی ٹی ڈی پولیس بنوں کو خفیہ ذرائع سے اطلاع ملی کہ خطرناک دہشت گرد علاقہ جانی خیل کے راستے اپنے گاؤں آرہا ہے جس پر سی ٹی ڈی پولیس نے مزانگہ روڈ پر خفیہ ناکہ بندی کر کے دہشت گرد مذکورہ کو دھر لیا۔ اُنہیں مزید تفتیش کیلئے نامعلوم مقام پر منتقل کیا گیا ہے جس سے اہم انکشافات متوقع ہیں۔

انگریزی اخبار ٹریبیون اور سماء ٹی وی کی ویب سائٹ کے مطابق 12 اپریل کو 15 پاکستانیوں نے پاکستان ایران بارڈر کو کراس کرنے کی کوشش کی. اس دوران ایرانی فورسز نے فائرنگ کی تو دو افراد ہلاک اور 5 گرفتار ہوئے اور باقی لوگ بھاگنے میں کامیاب ہو گئے. دو ہلاک ہونے والے افراد اور تین گرفتار افراد کا تعلق بنوں سے ہے.


ایڈیٹر نوٹ: اگر پاکستانی حکومت نے خیبر پختون خوا میں کاروباری سرگرمیوں اور روزگار کے مواقع پیدا کئے ہوتے تو آج لوگ ایران کے راستے بیرونی ممالک بھاگنے کی کوشش نہ کرتے. این ٹی ایس ٹیسٹوں کے دوران انسان کو اندازہ ہوتا ہے کہ بنوں میں بے روزگار نوجوانوں کی ایک فوج موجود ہے. 12 سکیل پی ایس ٹی پوسٹ کیلئے ایم فل کے نوجوانوں نے ایپلائی کی ہے. دہشت گردی کی ایک وجہ بھی معاشی سرگرمیوں کا فقدان ہے.

اپنا تبصرہ بھیجیں