بنوں سٹی صفائی نصف ایمان سے محروم،غلاظتوں کے ڈھیرے

بنوں شہر عملہ صفائی کی ہڑتال کی وجہ سے گندگی کے ڈھیر میں تبدیل ہوگیا ۔ڈبلیو ایس ایس بی حکام اور ٹی ایم اے انتظامیہ ملازمین کے سامنے بے بس نظر آرہی ہے۔ ڈبلیو ایس ایس بی میں ٹی ایم اے سے لئے گئے ڈیپوٹیشن ملازمین میں سے چار ملازمین کو واپس تحصیل میونسپل کمیٹی میں تبدیل کرکے بھیج دیا گیا جس پر عملہ صفائی نے کام کرنا چھوڑ دیا ہے جس کی وجہ سے شہر میں صفائی کی صورت حال انتہائی خراب ہوگئی ہے اور جگہ جگہ گندگی کے پہاڑ بن گئے ہیں اور شہر میں تعفن پھیل گیا جسکی وجہ سے شہریوں کا سانس لینا مشکل ہوگیا ہے ۔
شہریوں نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ اگر یہی صورت حال جاری رہی تو شہر میں موذی امراض کے پھیل جانے کا خدشہ ہے ۔شہریوں نے افسوس کا اظہار کیا ہے کہ شہریوں کو کس گناہ کی سزا دی جارہی ہے اگر ملازمین کے مطالبے جائز ہیں تو ان پر عمل درآمد کیا جائے ورنہ انتظامیہ کی بے بسی معنی خیز ہے۔ ایسے عناصر کے خلاف کاروائی کیوں نہیں کی جاتی جو اپنے مفادات کی خاطر شہریوں کی زندگی کو خطرے میں ڈال دیتے ہیں۔ ڈبلیو ایس ایس بی کے چیف ایگزیکٹو توقیر حسین نے کہا کہ تبدیل ہونے والے چار ملازمین میں سے امزر علی پر تحصیل ناظم کی طرف سے تحفظات سامنے آئے ہیں تاہم چاروں ملازمین کو معمول کے مطابق ڈبلیو ایس ایس بی اور ٹی ایم اے کے درمیان ہونے والے سماء معاہدے کے مطابق کاروائی کرتے ہوئے تبدیل کیا گیا ہے کیونکہ جن ملازمین کی کمپنی کو ضرورت نہیں ہوتی۔ اُنہیں تبدیل کرنا کمپنی کا حق ہے ۔ڈیپوٹیشن پر آنے والے ملازمین کو مقررہ تنخواہ سے زیادہ تنخواہ دی جاتی ہے۔ تاہم ان کے تبادلے ہم بغیر کوئی وجہ بتائے کرسکتے ہیں موجودہ صورت حال کے بارے میں ڈپٹی کمشنر کو آگاہ کیا گیا ہے جن کی ہدایت پر کاروائی عمل میں لائی جائے گی ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں