ایس ایچ او تھانہ ٹاؤن شپ ون ویلنگ کرنے والے نوجوانوں کی تذلیل کرتا ہے:بیزن خیل قبائل جرگہ

بیزن خیل قبائل گرینڈ قومی جرگہ نے ضلعی انتظامیہ کو ایس ایچ او تھانہ ٹاؤن شپ کو ہٹانے کے لئے تین دن کی ڈیڈ لائن دے دی ہے۔ جرگہ نے ایس ایچ او کے خلاف ثبوت قرآن پر حلف اُٹھا کر پیش کرنے کا اعلان کر دیااور کہا ہے کہ ہم نے ایس ایچ او کو کبھی یہ نہیں کہا کہ وہ ون ولنگ کے خلاف کارروائی نہ کرے بلکہ ہم نے یہ کہا ہے کہ پکڑے جانے والوں کی تذلیل نہ کی جائے اور اگر وہ کوئی غیر قانونی کام کر رہے ہیں توان سے اپنے ایجنٹوں کے ذریعے رشوت لے کرنہ چھوڑا جائے بلکہ ان کے خلاف ایف آئی آر درج کی جائے۔
علاقہ بیزن خیل کے عوام کا ایس ایچ او تھانہ ٹاؤن شپ کے رویے کے خلاف گرینڈ جرگہ کا انعقاد ہوا جس میں قوم کے سامنے ایس ایچ او کے رویے اور رشوت خوری کے حوالے سے پیش کئے گئے اور اعلان کیا کہ یہ ثبوت ڈی پی او کے سامنے بھی پیش کرنے کے لئے تیار ہیں ۔نمائندہ قومی جرگہ سے خطاب کرتے ہوئے حاجی اسحاق خان، شمیم اللہ خان ، ویلج کونسل ناظم غلام اکبر خان نے کہا کہ ایس ایچ او تھانہ ٹاؤن کے ساتھ تحصیل کونسلر ملک فاروق خان کی کوئی ذاتی چپقلش نہیں ۔ان کے سامنے قوم کے جوانوں نے فریاد کی تھی اور وہ ان کے خلاف قوم کے بچوں کو انصاف دلانے کے لئے اٹھے ہیں اور قوم کے بچوں کو انصاف دلانا کوئی جرم نہیں۔ ہم نے ایک پولیس آفیسر کے غیر انسانی رویے کی نشاندہی کی ہے اور ایسا ہمارے قوم کے بچوں کے ساتھ جو بھی کرے گا ہم اس کے خلاف آواز اُٹھائیں گےْ ۔
انہوں نے کہا کہ گزشتہ روز ہمارے سیاسی مخالفین میں اکثر ایس ایچ او کے ٹاؤٹ ہیں اور کالے کرتوتوں میں ایس ایچ او کی معاونت کرتے ہیں۔ اُنہوں نے تین دن کی ڈیڈ لائن دیتے ہوئے کہا کہ ضلعی انتظامیہ سے ہمیں توقع ہے کہ وہ مظلوموں کا ساتھ دے گی اور اگر ان کو ثبوت چاہئے تو ہم پیش کرنے کے لئے تیار ہیں اور اگر پھر بھی قوم کے بچوں کے ساتھ انصاف نہ کیا گیا تو جمعے کی شب ہم دوبارہ گرینڈ جرگہ بلا کر لائحہ عمل طے کریں گے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں